01-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ڈائریکٹر جنرل پشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کی جانب سے حیات آباد میں نجی ہسپتال کےلئےالاٹ شدہ پلاٹ کی منسوخی کے احکامات معطل کر دیئے اور متعلقہ حکام سے اس ضمن میں جواب طلب کرلیاہے۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزاروں نے حیات آباد میں نجی ہسپتال کے قیام کےلئے پی ڈی اے سے تقریبا  اڑھائی کنال پلاٹ حاصل کیا تاہم ڈی جی پی ڈی اے نے سولہ جنوری دو ہزار سترہ کو بلاجواز طور پر پلاٹ کی الاٹمنٹ منسوخ کر دی جو کہ غیر قانونی اور غیر آئینی اقدام ہے لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ پلاٹ کی الاٹمنٹ منسوخی کالعدم قرار دی جائے ۔