07-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پشاور کی چار یونین کونسلوں کے سیکرٹریوں کی بھرتی کے دو ماہ بعد برطرفی کے احکامات کالعدم قرار دیتے ہوئے ملازمت پر بحال کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس لعل جان خٹک پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزاروں کی بطور یونین کونسل سیکرٹری تقرری باقاعدہ این ٹی ایس کے تحت عمل میں لائی گئی اور بھرتی کے لئے تمام تقاضے پورے کئے گئے ہیں تاہم درخواست گزاروں کویہ کہہ کر بھرتی کے دو ماہ بعد برطرف کر دیا گیا کہ ان کی بھرتی قواعد کے برعکس کی گئی ہے حالانکہ بھرتی کےلئے تمام آئینی وقانونی تقاضے پورے کئے گئے ہیں لہذا درخواست گزاروں کی برطرفی کالعدم قرار دیا جائے ۔

فاضل عدالت نے دلائل کے بعد درخواست گزاروں کو ملازمت پر بحال کرتے ہوئے برطرفی کے احکامات کالعدم قرار دے دیئے ۔