21-06-2019

لاہور ہائی کورٹ نے چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال کی تقرری کے خلاف دائر درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کر لیا ہے۔

دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ صدر پاکستان چیئرمین نیب کی تقرری کے لئے وزیراعظم اور کابینہ کی جانب سے کہے جانے کے بعد تقرر کرسکتے ہیں جبکہ صدر پاکستان نے چیئرمین نیب کی تقرری وزیراعظم اور کابینہ کے بغیر ازخود کی اور بعد میں مشاورت کی لہذا ان کی تقرری کالعدم قرار دی جائے۔