24-04-2018

چیف جسٹس پاکستان نے نابینا وکیل یوسف سلیم کی اپیل کا نوٹس لیتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ کو نابینا وکیل کادوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

یوسف سلیم نے سلیکشن کمیٹی کی جانب مسترد کیے جانے کے بعد ان کا انٹرویو دوبارہ لیے جانے کی اپیل کی تھی جس پر چیف جسٹس پاکستان نے اپیل پر نوٹس لیتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ کو یوسف سلیم کا دوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت کردی۔

بصارت سے محروم 25 سالہ یوسف سلیم نے نابینا ہونے کے باوجود پنجاب یونیورسٹی سے ایل ایل بی کا امتحان پاس کرکے گولڈ میڈل حاصل کیا ہے۔ یوسف سلیم نے سول جج کے عہدے کیلئے امتحان دیاتھا جس میں کامیابی بھی حاصل کرلی تھی لیکن نابینا ہونے کی وجہ سے سلیکشن کمیٹی نے انہیں انٹرویو میں فیل کردیا تھا۔