11-04-2018

پشاورہائی کورٹ نے کرپشن میں مبینہ طور پر ملوث ڈائریکٹر ایف آئی اے شاہد الیاس کی جانب سے دائر ضمانت درخواست خارج کردی ہے ۔

جسٹس روح الاآمین خان کی سربراہی میں قائم پشاور ہائی کورٹ  کے دو رکنی بنچ نے دائر ضمانت درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزار  ایف آئی ا ے کے ڈائریکٹر  شاہد الیاس نے ایک منی چینجر کو گرفتار کیا جس نے بعد میں ان پر چھتیس لاکھ روپے لینے کا الزام عائد کرتے ہوئے مقدمہ درج کیا حالانکہ درخواست گزار کرپشن میں ملوث نہیں اور ان کو ایمانداری کی سزا دی جا رہی ہے  لہذا درخواست گزار کی ضمانت درخواست منظور کی جائے۔

دوسری طرف مدعی کے وکیل نے عدالت میں موقف اپنایا کہ ملزم نے ایک شخص کو رہا کرنے کے بدلے ان سے چھتیس لاکھ روپے بطور رشوت لی ہے جو ثبوت کے ساٹھ ان سے برآمد ہوئے لہذا اس کی ضمانت درخواست مسترد کی جائے ۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر  دائر  ضمانت درخواست مسترد کرکے خارج کردی ۔