16-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوشنز  میں کام نہ کرنے والے ڈاکٹروں کو بھی ہیلتھ پروفیشنل الاونس دینےکے لئے دائر رٹ پر  سیکرٹری صحت اور سیکرٹری خزانہ خیبر پختونخوا  کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس محمد ایوب خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ درخواست گزار گجو خان میڈیکل کمپلیکس صوابی میں ڈاکٹرز  تعینات ہیں اور ایم ٹی آئی ایکٹ کے نفاذ کے بعد اس کے تحت نہ آنے والے ہسپتالوں میں تعینات ڈاکٹروں کو اضافی ہیلتھ پروفیشنل الاونس اد ا کیا جائے گا تاہم انہیں یہ اضافی ہیلتھ پروفیشنل الاونس اد انہیں کیاجا رہا لہذا درخواست گزاروں کو ہیلتھ پروفیشنل الاونس ادا کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ۔