22-08-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ڈبل شاہ کیس میں وعدہ معاف گواہ بننے والے ملزم کی نیب کے ہاتھوں دوبارہ گرفتاری کے احکامات کالعدم قرار دے دیئے ہیں ۔

جسٹس سید افسر شاہ اور جسٹس غضنفر علی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے  دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار رشید علی کو ڈبل شاہ کیس میں ملزم نامزد کیا گیا اور اسے دو ہزار چودہ میں گرفتار کیا گیا جبکہ بعد میں وہ وعدہ معاف گواہ بن گیا تھا تاہم جب انہوں نے زیر حراست اپنی گاڑی کی واپسی کےلئے درخواست دی تو نیب نے اس کی گرفتاری کےلئے دوبارہ وارنٹ جاری کردیئے ہیں جس کا کوئی قانونی جواز نہیں بنتا ۔