26-01-2017

کنٹرول لائن کے دونوں طرف اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری آج بھارت کا یوم جمہوریہ یوم سیاہ کے طورپر منارہے ہیں جس کا مقصد بھارت کی طرف سے کشمیریوں کو حق خودارادیت دینے سے انکار کے خلاف احتجاج کرنا ہے۔ یوم سیاہ منانے کی اپیل سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یٰسین ملک سمیت مشترکہ مزاحمتی قیادت نے کی ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال کی جا رہی ہے اوردنیا بھر کے دارالحکومتوں میں احتجاجی مظاہرے ہوں گے اورریلیاں نکالی جائیں گی۔ کٹھ پتلی انتظامیہ نے بھارت کے یوم جمہوریہ کے موقع پر پورے مقبوضہ کشمیر خصوصاً سری نگر اور جموں کی ناکہ بندی کردی ہے۔
مقبوضہ علاقے میں ہر جگہ بھارتی فوج اور پولیس کے ہزاروں اہلکار تعینات کئے گئے ہیں جس سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ مظفر آباد میں مختلف سیاسی اورسماجی تنظیموں نے بھارت کے یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کیلئے تقریبات اور احتجاجی ریلیوں کا اہتمام کیا ہے