17-11-2017

پشاورہائی کورٹ نے کوہاٹ یونیورسٹی کی کمپیوٹرسائنسزڈیپارٹمنٹ میں بھرتی میں نظراندازکرنے پروائس چانسلر یونیورسٹی اورر جسٹرار یونیورسٹی سے جواب طلب کرلیاہے۔

 جسٹس وقاراحمد سیٹھ اورجسٹس محمد غضنفرخان پرمشتمل دورکنی بینچ نے کیس کی سماعت  جس میں درخواست گزارمحمد منیر عمر نے موقف اپنایا کہ کوہاٹ یونیورسٹی کے کمپیوٹرسائنسز ڈیپارٹمنٹ میں ریگولربنیادوں پرتین پوسٹوں پر بھرتیوں کے لئے اشتہاردیاگیاتھا تاہم یونیورسٹی انتظامیہ نے بعدمیں ایک مستقل اور دو افراد کو عارضی بنیادوں پر بھرتی کرنے کافیصلہ کیامیرٹ لسٹ کے مطابق درخواست گزاردوسرے نمبر پر تھا تاہم اسے بھرتیوں میں نظراندازکیاگیا اوراس کی حق تلفی کی گئی ہے جس پر عدالت عالیہ نے یونیورسٹی کے رجسٹرار اور وائس چانسلر سے آئندہ سماعت پرجواب جمع کرانے کے احکامات جاری کر دیئے ۔