19-04-2018

پشاورہائی کورٹ نے نجی کمپنی کی ائیرپورٹ بیس پر گاڑیوں کی نقل و حرکت پر پابندی کے بیس کمانڈر پاکستان ائرفورس کے احکامات کالعدم قرار دیئے ہیں۔

پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس وقار احمدسیٹھ اورجسٹس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے نجی کمپنی میسرزگیری ڈی ناٹاکمپنی کی جانب سے بوساطت علی گوہردرانی ایڈوکیٹ دائر درخواست پر سماعت کی۔درخواست گزار کے مطابق درخواست گزار کمپنی ایک معاہدے کے تحت باچا خان ائیرپورٹ بیس پرگاڑیوں اورآلات کی نقل وحرکت کرتی ہے تاہم بیس کمانڈرپاکستان ائرفورس پشاور نے سکیورٹی وجوہات کوجواز بناکرکمپنی کے ائیرپورٹ بیس پرنقل و حرکت پرپابندی عائد کی ہے ،جو کہ غیرقانونی اقدام ہے۔ عدالت عالیہ نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پررٹ پٹیشن منظورکرکے بیس کمانڈر کے احکامات کالعدم قرار دے دئیے اور کمپنی کو ائیرپورٹ بیس پر گاڑیوں کی نقل و حرکت کی قانون کے مطابق اجازت دے دی ہے۔