29-03-2018

پشاور ہائی کورٹ نے گریڈ 19کے آفیسر محمد طارق کو نیب سے محکمہ صحت میں واپس بھیجنے کےخلاف دائر رٹ میں جواب جمع نہ کر نے پر سیکرٹری صحت کی تنخواہ قرق کرنے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں۔

جسٹس قیصر رشید اور جسٹس محمد ایوب پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دورکنی بنچ نے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا  کہ درخواست گزار کو مستقل طور پر نیب میں ضم کیا گیا تھا تا ہم سابق ڈی جی نیب نے درخواست گزار کو  تمام قوانین کو بالائے طاق رکھتے ہوئے محکمہ صحت واپس بھیج دیا جو کہ غیر قانونی اقدام ہے ۔

عدالت کوبتایا گیا کہ عدالتی احکامات کے باوجود سیکر ٹری صحت  خیبر پختونخوا نے اب تک جواب جمع نہیں کرایا ہے جسس پر عدالت نے سیکر ٹری صحت کی تنخواہ قرق کر کے جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔