03-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ہسپتالوں سے نکلنے والے فاضل مادے اور کچر ے کو ٹھکانے لگانے کےلئے دائر رٹ پر تمام بڑے ہسپتالوں اور ڈی جی ہیلتھ سروسز خیبر پختونخوا کو نوٹس جاری کرکے تمام فریقین سے تیرہ اپریل تک جواب طلب کرلیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی کی سربراہی میں قائم بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی ۔عدالت کو بتایا گیا کہ گزشتہ سماعت پر عدالت نے عبوری ریلیف دیتے ہوئے تمام متعلقہ اداروں سے کچرے کو ٹھکانے لگانے کے منصوبے ، اس حوالے سے کام کرنے والے اہلکاروں کے ریکارڈ ، ان کی تنخواہیں ، اخراجات و دیگر  کی تفصیلات فراہم کرنے کا حکم دیا تھا تاہم فریق بنائے گئے اداروں نے تاحال یہ تفصیلات فراہم نہیں کیں۔ دوران سماعت ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل نے عدالت کوبتایا کہ کچرے کو جمع کرنے ، اسکی سٹوریج اور ضائع کرنے کے عمل کی نگرانی کی ذمہ داری ہیلتھ کیئر کمیشن اور سیکرٹری ہیلتھ کی بنتی ہے ۔فاضل عدالت نے دلائل سننےکے بعد کیس میں بنائے گئے تمام متعلقہ اداروں کو سختی سے ہدایت کی اس حوالے سے تیرہ اپریل تک جواب عدالت میں جمع کرایا جائے ۔