15-09-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز اور ڈائریکٹر جنرل ادارہ تحفظ ماحولیات سے ہسپتالوں کی گندگی اور فضلہ تلف کرنے سے متعلق جامع رپورٹ  طلب کرلی ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ  جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس محمد ایوب پر مشتمل دو رکنی بنچ نے سیف اللہ ایڈوکیٹ کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ صوبہ بھر اوربالخصوص پشاور کے تینوں بڑے ہسپتالوں میں گندگی اور فاضل مواد تلف کرنے کا کوئی باقاعدہ انتظام نہیں اور اگر کسی ہسپتال میں اس حوالے سے مشین بھی نصب ہے تو گندگی ٹھکانے والی مشینوں کی دیکھ بھال کا کوئی انتظام نہیں جس کے باعث ہسپتالوں سے نکلنے والی گندگی ماحول پر منفی اثرات مرتب کررہی ہے اور اس طرح ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ ہورہا ہے لہذا اس معاملے کا نوٹس لیا جائے ۔

عدالت نے ڈی جی ہیلتھ سروسز خیبر پختونخوا اور ڈی جی ادارہ تحفظ ماحولیات سے پندرہ روز کے اندر جامع رپورٹ طلب کرلیا اور سماعت اگلی پیشی تک ملتوی کردی ۔