10-10-2017

خیبر پختونخوا جوڈیشل اکیڈمی پشاور میں ہیومن رائیٹس بین الااقوامی قانون کے رو سے کے موضوع پر ایک روزہ سمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں صوبے کے مختلف اضلاع میں تعینات جوڈیشل افسران جن میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز، لیبر کورٹ ، انسداد دہشت گردی کورٹس کے پریزائڈینگ آفیسرز ،اور سول جج کم جوڈیشل مجسٹریٹس سمیت غیر سرکاری تنظیم کے آفیشلز نے بھی شرکت کی ۔

خیبر پختونخوا جوڈیشل اکیڈمی میں منعقد ہونے والا ایک روزہ سیمیناریو این ایچ سی آر اور  شارپ نامی غیر سرکاری تنظیم کے تعاون سے منعقد کیا گیا  جو انسانی حقوق اور قیدیوں کے حقوق سے متعلق کام کرتی ہے۔

سیمینار میں انسانی حقوق کے کارکن ندیم فرید ، یو این ایچ سی آر کے نمائندے مورین ماسٹر ، اے ایم ار ایس کے نمائندے جبران نذیراور شارپ کے لیاقت بنوری نے مختلف موضوعات پر لیکچرز دیئے اور سوال جواب کے سیشنز منعقد کئے گئے ۔

بعد میں سمینار کی اختتامی تقریب منعقد ہوئی جس میں ڈائریکٹر جنرل خیبر پختنوخوا جوڈیشل اکیڈمی محمد مسعود خان ، سینئر ڈائریکٹر ایڈمنسٹریشن محمدآصف خان ، ڈین فیکلٹی خواجہ وجہہ الدین سمیت جوڈیشل اکیڈمی پشاور کے دیگر افسران اور یواین ایچ سی آر اور شارپ کے نمائندوں نے شرکت کی ۔

اختتامی تقریب سے اپنے خطاب میں ڈی جی جوڈیشل اکیڈمی پشاور نے صوبے کے جوڈیشل افسران کے ساتھ ایک روزہ انٹریکشن سیشن کو مفید اور کارآمد قرار دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ اس ایک روزہ سمینار سے نہ صرف انسانی حقوق اور قوانین سے متعلق شرکاء کے علم میں مزید اضافہ ہوا ہوگا بلکہ اس سے انصاف کی فراہمی کے عمل میں بھی مدد ملے گی۔

بعد میں ڈی جی جوڈیشل اکیڈمی نے ایک روزہ سمینار میں شریک شرکاء میں سرٹیفیکٹس بھی تقسیم کیں ۔