22-08-2017

سینٹ میں ایک بل متعارف کروایا گیا ہے جس میں ملک کی جیلوں میں مختلف سنگین مقدمات میں عرصہ دارز سے قید افراد کو بے گناہ ہونے کی صورت میں سرکار کی جانب سے معاوضہ دینے کے بارے میں کہا گیا ہے۔یہ بل پاکستان تحریک انصاف کے سینٹر اعظم سواتی کی جانب سے  سینٹ ایوان میں پیش کیا گیا۔ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کی مختلف جیلوں میں ہزاروں ایسے افراد ہیں جن کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کیے گئے اور عرصہ دارز سے ان کے مقدمات ماتحت عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔  جس طرح پوری دنیا میں کریمینل جسٹس سسٹم کے تحت مختلف عدالتوں سے بےگناہ قرار دیئے جانے والے افراد کو حکومت کی جانب سے معاوضہ ادا کیا جاتا ہے اسی طرح پاکستان میں بھی ایسے افراد کو معاوضہ دیا جائے تاکہ ایسے افراد کی کسی حد تک دادرسی کی جاسکے۔حکومت نے اس بل کی مخالفت نہیں کی جس کے بعد سینیٹ کے چیئرمین نے یہ معاملہ متعقلہ قائمہ کمیٹی کو بھجوا دیا۔