05-04-2017

احتساب عدالت پشاور نے اختیارات کا ناجائز استعمال اور پچاس کروڑ روپے سے زائد مالیت کے غیر قانونی اثاثے بنانے کے الزام میں گرفتار نیشنل ہائی ویز اتھارٹی کےسابق ممبر یوسف علی کی مزید دس روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے اسے نیب کی تحقیقاتی ٹیم کے حوالے کر دیا ہے ۔

  پانچ روزہ  جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر نیب نے ملزم کو احتساب عدالت میں پیش کیا اور بتایا کہ ملزم پر الزام ہے کہ اس نے دوران ملازمت اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے اپنی آمدن کے برعکس اسلام آباد، حیات آباد، ڈی ایچ اے کراچی میں قیمتی بنگلے ، گھر اور پلاٹس خریدے جبکہ اپنے عزیز و اقارب کے نام پر ہری پور اور چارسدہ میں زرعی زمینیں بھی خریدی ہیں ، نیب پراسیکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزم سے ابھی تحقیقات باقی ہیں اس لئے استدعا کہ اسے مزید جسمانی ریمانڈ پر نیب تحقیقاتی ٹیم کے حوالے کیا جائے جو عدالت نے منظور کر لی اور ملزم کو دس دنوں کے جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحیققاتی ٹیم کے حوالے کرنے کا حکم دیا ۔