06-06-2018

سپریم کورٹ پاکستان نے اصغر خان عملدرآمد کیس کی سماعت کے دوران تمام افراد کو ہفتہ 9 جون تک تحریری جواب جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے  کہا ہے کہ  سویلین افراد کو ایف آئی  اے کے سامنے پیش ہونا ہوگا، جبکہ اس بات کا تعین عدالت کرے گی کہ کن کا ٹرائل فوج میں ہونا ہے اور کن کا سویلین اداروں میں۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے آج اصغر خان عملدرآمد کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے دوران متعدد سیاسی رہنماؤں کے وکلاء اور سینئر سیاستدان جاوید ہاشمی عدالت میں پیش ہوئے تاہم سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف عدالت میں پیش نہ ہوئے جس پر فاضل عدالت نے انہیں اگلی سماعت پر اپنے وکیل کے ذریعے پیش ہونے کی ہدایت کردی ۔