24-11-2017

پشاور ہائی کورٹ نے رکن صوبائی اسمبلی جمشید خان مہمند کے حلقے پی کے 27کے ترقیاتی منصوبے ڈیڈک کمیٹی کے اجلاس سے نکالنے کےخلاف حکم امتناعی میں توسیع کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے جواب طلب کرلیا ہے۔

 چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحییٰ آفریدی اور جسٹس سید افسر شاہ پر مشتمل دورکنی بنچ نے کیس کی سماعت  کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ سالانہ ترقیاتی پروگرام برائے 2017-18ء میں ان کے حلقے کیلئے 7کروڑ روپے کے منصوبے منظور ہوئے  لیکن ڈیڈک کمیٹی نے ان منصوبوں کو ڈیڈک کے اجلاس میں مسترد کرنے کا منصوبہ بنایا اور اس کیلئے ابتدائی میٹنگ کی حالانکہ قانون کے تحت اگر سالانہ ترقیاتی پروگرام میں کوئی منصوبہ شامل ہو اور اس کیلئے فنڈز بھی مختص ہو تو اسے نہیں نکالا جا سکتا ۔