05-12-2017

لاہور ہائی  کورٹ نے پنجاب حکومت کی درخواست مسترد کرتے ہوئے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ منظر عام پر لانے کا حکم دے دیا ہے۔

واضح رہے کہ لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی  پر مشتمل سنگل بنچ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے متاثرین کی درخواست پر انکوائری رپورٹ پبلک کرنے کا حکم دیا تھا، جس کے خلاف پنجاب حکومت نے انٹرا کورٹ اپیل دائر کی تھی ۔

جسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں جسٹس شہباز رضوی اور جسٹس قاضی محمد امین احمد پر مشتمل لاہور ہائی کورٹ کے تین رکنی فل بینچ نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد 24 نومبر کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

 عدالت نے سنگل بینچ کا فیصلہ درست قرار دیتے ہوئے 3 روز میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ لواحقین کو فراہم کرنےکا حکم دے دیا ۔