12-04-2018

پشاور ہائی کورٹ نے پشاور میں واقع افغان نیشنل بنک کی اراضی کی جعلی الاٹمنٹ سے متعلق دائر رٹ درخواست پر حکم امتناعی جاری کرتےہوئے پشاور کے ڈپٹی کمشنر ، ریونیو ڈیپارٹمنٹ اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ہے۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس مسرت ہلالی پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ افغان حکومت کے زمین کےلئے الاٹی شہری نے جعلی کاغذات جمع کرائے جس پراسے زمین الاٹ کی گئی لہذا اس اقدام کوغیرقانونی قرار دے کر کالعدم قرا دیا جائے ۔

عدالت نے جعلی کاغذات جمع کرانے پر ڈپٹی کمشنر ، ریونیو ڈیپارٹمنٹ اور دیگر فریقین سے جواب طلب کرکے الاٹمنٹ پر حکم امتناعی جاری کیا اور کیس کی مزید سماعت انیس مئی تک ملتوی کردی ۔