26-10-2017

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف نے انتظامی مجسٹریٹی نظام کی بحالی کے لئے آئین میں29ویں ترمیم کی منظوری دے دی جس کے تحت صوبے ضروری قانون سازی کرسکیں گے دونوں ایوانوں سے ترمیم کی منظوری اور صدارتی توثیق کے بعد انتظامی مجسٹریٹس کی تقرری شروع ہوجائے گی۔

دوسری طرف فاٹا کو صوبہ خیبرپختونخوامیں شامل کرنے کے لئے صوبائی نشستوں میں اضافے کی 30ویں آئینی ترمیم کو ایک بار پھر موخرکردیاگیا۔اس بل کے تحت خیبرپختونخوااسمبلی میں فاٹا کی نشستوں کا تعین ہونا ہے۔ ضلعی مالیاتی کمیشن کی تشکیل اور دوردراز علاقوں پسماندہ علاقوں میں ہائی کورٹس کے بینچزختم کرنے کے بلز کثرت رائے سے مسترد کر دیئے گئے