25-01-2017

پشاور ہائی کورٹ نے خیبر پختونخوا اور فاٹا سے لاپتہ ہونے والے افراد کی بازیابی کےلِئے دائر آئینی درخواستوں پر ڈپٹی اٹارنی جنرل پاکستان اور ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ آپس میں بیٹھ کر لاپتہ افراد بارے متعلقہ اداروں سے مکمل کوائف حاصل کریں اور عدالت کو بتائیں کہ لاپتہ افراد کس کس ادارے کے پاس ہیں اور اگر نہیں تو بھی عدالت کو آگاہ کیا جائے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے لاپتہ افراد سے متعلق  مختلف رٹ درخواستوں کی سماعت کی ۔

چیف جسٹس نے دوران سماعت کہا کہ کسی بھی شہری کے لاپتہ ہونے کے بعد متعلقہ اادارے کو اس کا علم ہونا چاہیئے اور اس حوالے سے سیکرٹری داخلہ ، سیکرٹری دفاع ، اور صوبائی سیکرٹری داخلہ آپس میں بیٹھیں اور لاپتہ افراد بارے مکمل تفصیلات سے عدالت کو آگا ہ کریں ۔