22-11-2017

پشاور ہائی کورٹ نے معدنیات کھدائی کے لائسنس کی تجدید کےلئے فیس داخل کرنے کے باوجود تجدید نہ کرنے پر ڈائریکٹر جنرل معدنیات خیبر پختونخوا کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ہے۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس سید افسر شاہ پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار نے صوبے کے مختلف علاقوں میں معدنیات کی کھدائی کےلئے لائسنس لیا تھا اور جب لائسنس کی مدت مکمل ہوئی تو تجدید کےلئے فیس بھی جمع کرائی لیکن فیس ادا کرنے کے باوجود تاحال ان کی لائسنس کی تجدید نہیں ہو سکی جبکہ محکمے نے اس سے قبل لیٹر جاری کیا تھآ کہ تجدیدکی فیس داخل کی جائے ۔عدالت نے ابتدائی دلائل کے بعد ڈی جی معدنیات کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ۔