29-11-2017

پشاورہائی کورٹ نے نیشنل ٹیرف کمیشن کے چیئرمین کی تقرری کے خلاف رٹ پٹیشن منظورکرتے ہوئے ان کی تقرری کالعدم قراردیدی ہے۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اورجسٹس یونس تہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے  نیشنل ٹیرف کمیشن کے چیئرمین قاسم ایم نیاز کی تقرری کے خلاف دائر رٹ پٹیشن  کی سماعت کی جس میں درخواست گزار وں کے وکیل نے عدالت کوبتایاکہ نیشنل ٹیرف کمیشن کے چیئرمین کی تقرری ستمبر2016   میں کی گئی جبکہ وفاقی کابینہ نے تقرری کے بعد مارچ 2017 میں باقاعدہ منظوری دی جو کہ غیرقانونی ہے اسی طرح اس عہدے کیلئے تعلیمی شرائط میں ایم اے اکنامکس ،ایم اے انٹرنیشنل لاء اورکمرشل وبزنس لاء کی کوالیفیکشن مقررہے تاہم موجودہ چیئرمین کی تقرری میں تمام تر قواعدوضوابط کو نظراندازکیاگیاہے اور وہ کوالیفیکشن پر پورانہیں اترتے ہیں ۔