10-05-2018

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے سینٹرل جیل پشاور اور ملحقہ دماغی امراض کے اسپتال کا دورہ کیا، انہوں نے اسپتال میں صفائی کی ناقص صورتحال اور جیل میں گنجائش سے زیادہ قیدی رکھنے پر برہمی کا اظہار کیا۔

چیف جسٹس  پاکستان نے سینٹرل جیل کے اندر اسپتال کی موجودگی پر سوال اٹھایا، مریضوں کو فراہم کی جانے والی سہولیات پر بھی ناراضگی کا اظہار کیا اور صفائی کی صورتحال کو غیر تسلی بخش قرار دیا۔

چیف جسٹس نے جیل کے دورے کے دوران گنجائش سے زیادہ قیدی رکھنے پر تشویش کا اظہار کیا، انہوں نے وزیراعلیٰ کو بھی جیل طلب کرلیا۔

حکام نے چیف جسٹس کو بتایا کہ جیل کی نئی عمارت تیار ہے، اگلے مہینے بعض قیدیوں کو وہاں منتقل کیا جائے گا۔